کیا مدرسہ میں‌ اذان کے ساتھ باجماعت نماز پڑھنے سے نماز ہو جائے گی؟

سوال نمبر:3027
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ کیا مدرسہ میں‌ اذان کے ساتھ نماز باجماعت پڑھنے سے نماز ہو جائے گی؟ طلبہ کی ضرورت کو سمجھتے ہوئے مدرسہ میں‌ اذان اور نماز ادا کر سکتے ہیں؟

  • سائل: قاری محمد اقبال قادریمقام: یو-پی، انڈیا
  • تاریخ اشاعت: 10 جنوری 2014ء

زمرہ: عبادات  |  نماز  |  نمازِ باجماعت کے احکام و مسائل

جواب:

اگر تو مدرسہ کے قریب مسجد ہے پھر تو اس میں نماز ادا کرنی چاہیے۔ مسجد دور ہے تو پھر یہی بہتر ہے مدرسہ میں مسجد ظاہر کی جائے وہاں اذان بھی کہی جائے اور اہل محلہ بھی وہاں نماز ادا کریں کیونکہ مدرسہ کے طلبہ کے لیے مسجد دور ہو تو اہل محلہ کے لیے بھی دوری ہو گی۔ جب اذان عام ہو گی تو مسجد کے حکم میں تمام لوگ وہیں نماز ادا کریں۔ وگرنہ نماز تو ہو جائے گی لیکن مسجد کا ثواب نہیں ملے گا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟