Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا فی کلو وزن کے حساب سے قربانی کا جانور خریدنا جائز ہے؟

کیا فی کلو وزن کے حساب سے قربانی کا جانور خریدنا جائز ہے؟

موضوع: عبادات  |  قربانی   |  مسائل قربانی

سوال پوچھنے والے کا نام: دانش علی       مقام: کراچی

سوال نمبر 2897:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ آج کل قربانی کے لیے بکرا وزن کے حساب سے ملتا ہے مطلب یہ ہے کہ 419 روپے فی کلو بکرا کیا لانا جائز ہے اور کیا اس طرح قربانی ہو جائے گی؟

جواب:

قربانی کے لیے خریدے جانے والے جانور کی عمر پوری ہو یعنی ایک سال سے کم نہ ہو، صحت مند اور تندرست ہو، کوئی عیب نہ پایا جاتا ہو یعنی خوبصورت ہو۔ باقی ریٹ کر کے خریدیں یا تول کر وزن کے حساب سے آپ کی قربانی ہو جائے۔ اکثر تو جانور کو دیکھ بھال کر اس کی قیمت طے کر کے ہی خریدے جاتے ہیں۔ یہ اچھا طریقہ بھی ہے کیونکہ جانور کی صحت اور خوبصورتی کے اعتبار سے قیمت ہوتی ہے صرف گوشت کو نہیں دیکھا جاتا۔ جب تول کر لیا جائے گا اس میں سب برابر ہونگے۔ بہر حال تول کر بھی خریدا تو قربانی ہو جائے گی۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-10-14


Your Comments