Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا تکمیل نکاح کے لیے کلمے پڑھانا ضروری ہے؟

کیا تکمیل نکاح کے لیے کلمے پڑھانا ضروری ہے؟

موضوع: نکاح

سوال پوچھنے والے کا نام: بشیر خان       مقام: جہلم، پاکستان

سوال نمبر 2750:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ ایک امام صاحب نے تقریب نکاح میں تلاوت قرآن مجید کے بعد خطبہ نکاح پڑھا اور اس کے بعد لڑکا اور لڑکی سے پوچھا کہ اس مہر (مہر کی مقدار بتائی) کے ساتھ قبول ہے؟ لڑکا اور لڑکی نے کہا کہ قبول ہے۔۔۔ اس تقریب میں بڑے چھوٹے سب حاضر تھے۔۔۔ امام صاحب نے کلمے نہیں پڑھائے ۔۔۔ کیا یہ نکاح صحیح ہے؟ مختصرا جواب دیں۔ شکریہ

جواب:

صرف دو عاقل بالغ گواہوں کی موجودگی میں بعوض حق مہر عاقل بالغ لڑکا لڑکی ایجاب وقبول کر لیں تو نکاح قائم ہو جاتا ہے۔ خطبہ نکاح پڑھنا سنت ہے۔ باقی تلاوت، نعت اور کلمے پڑھنا باعث برکت ہیں لیکن ان کے بغیر نکاح ہو جاتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے یہاں کلک کریں
نکاح پڑھنے کا مسنون طریقہ کیا ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-09-09


Your Comments