Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - عشر کی شرعی مقدار کیا ہے؟

عشر کی شرعی مقدار کیا ہے؟

موضوع: عشر

سوال پوچھنے والے کا نام: افتخار احمد عباسی       مقام: نواب شاہ سندھ

سوال نمبر 2652:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ عشر کی حد کتنی مقرر ہے۔ 100 بوری پر کتنا عشر دینا ہو گا؟

جواب:

پہلی صورت جس زمین کی آب پاشی کرنے پر خرچ نہ کیا جائے اس کی پیداوار پر دسواں حصہ (عشر) ہے اور دوسری صورت جس زمین کی آبپاشی ٹیوب ویل یا نہر یا کسی اور ایسے ذریعے سے کی جائے جس پر خرچ اٹھے تو اس پر بیسواں حصہ (نصف عشر) ہے۔ مثلا پہلی صورت میں 100 بوری پر دس (10) بوری عشر دیا جائے گا۔ اگر دوسری صورت میں 100 بوری پیداوار ہو تو پھر نصف عشر یعنی 100 میں سے پانچ (5) بوری دینا پڑے گا۔ لہذا آپ دیکھ لیں آپ زمین کو پہلی صورت کے مطابق سیراب کرتے ہیں یا دوسری صورت کے مطابق؟ اگر پہلی صورت کے مطابق سیراب کرتے ہیں تو 10 بوری عشر دیں۔ اگر دوسری صورت کے مطابق سیراب کرتے ہیں تو 5 بوری دیں گے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-08-24


Your Comments