Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - سود پر رقم لے کر ویزہ لینے سے کیا وہ کمائی حلال ہو گی؟

سود پر رقم لے کر ویزہ لینے سے کیا وہ کمائی حلال ہو گی؟

موضوع: خریدو فروخت (بیع و شراء، تجارت)   |  سود

سوال پوچھنے والے کا نام: نوید       مقام: لا ہور، پاکستان

سوال نمبر 2614:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ ہمارا ٹریول ایجنسی کا کام ہے، ہمارے اکثر مسافر سود پہ رقم اٹھا کر ویزہ لیتے ہیں کیا ان کا سود پہ رقم اٹھا کہ ہمیں‌ دینے سے ہماری کمائی پہ اثر پڑے گا، یا ہماری کمائی حلال ہو گی، برائے مہربانی وضاحت کے ساتھ بتائیں۔

جواب:

اس کا آپ کی کمائی پر اثر نہیں پڑے گا کیونکہ جو سود لیتے ہیں اس کا گناہ ان پر ہے۔ آپ تو اپنے اخراجات لیتے ہیں۔ کیونکہ آپ ان کو نہیں کہتے ہیں کہ سود پر رقم لے کر ہمیں دو۔ آپ کی کمائی پر اس وقت اثر پڑے گا جب آپ بھی سود لینے یا دینے میں ملوث ہونگے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-07-04


Your Comments