کیا انگلش قوانین کے مطابق طلاق ہو جانے سے اسلام میں بھی ہو جاتی ہے؟

سوال نمبر:2544
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ میں مطلقہ ہوں اگر کسی لڑکی کو انگلش قوانین کے مطابق طلاق ہو جائے تو کیا اسے اسلامی قوانین کے مطابق بھی طلاق ہو جائے گی؟ اگر ہو جاتی ہے تو برائے مہربانی جتنا جلدی ہو سکے مجھے اس پر فتوی بھیج دیں۔

  • سائل: سدرہمقام: یو کے
  • تاریخ اشاعت: 23 اپریل 2013ء

زمرہ: طلاق   |  جدید فقہی مسائل

جواب:

اگر آپ کے خاوند نے آپ کو نارمل حالت میں سوچ سمجھ کر طلاق دی ہے تو جتنی بار دی ہے وہ واقع ہو جائے گی، چاہے جس قانون کے مطابق بھی دی جائے۔ اب آپ نے وضاحت نہیں کی کہ آپ کے خاوند نے کس حالت میں اور کتنی بار آپ کو طلاق دی ہے؟ اس لیے ہم یہاں یہ فیصلہ نہیں دے سکتے ہیں کہ طلاق ہو گئی ہے یا نہیں، لیکن یہ مسلمہ حقیقت ہے کہ طلاق جس قانون کے مطابق بھی دی جائے اور جتنی بار دی جائے وہ ہو جاتی ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟