Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - اپنے مسلک کی مسجد نہ ہونے پر باجماعت نماز کیسے ادا کی جائے؟

اپنے مسلک کی مسجد نہ ہونے پر باجماعت نماز کیسے ادا کی جائے؟

موضوع: عبادات  |  نماز

سوال پوچھنے والے کا نام: محسن قادری       مقام: فیصل آباد

سوال نمبر 2473:
السلام علیکم مفتی صاحب برائے کرم رہنمائی فرمائیں کے اگر گھر کے پاس صرف دوسرے مسلک کی مسجد ہو تو نماز مسجد میں پڑھیں یا گھر میں پڑھیں؟ ہم نے سنا ہے کہ اکابرین نے ان کے سا تھ ملنے اور نماز پڑھنے سے منع فرمایا ہے۔

جواب:

کسی کا نام لینے کی ضرورت نہیں ہے، بس ایک قاعدہ یاد رکھ لیں جو بھی صحیح العقیدہ مسلمانوں کو کافر، مشرک اور بدعتی کہے، اس کے پیچھے نماز خراب نہ کریں، جو ایسا نہیں کرتا ہے، وہ شخص بدعقیدہ نہیں ہے، اس کے پیچھے نماز پڑھیں، کوئی ممانعت نہیں ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-03-26


Your Comments