Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - نومولود بچے کے کان میں‌ آذان دینے کا کیا طریقہ ہے؟

نومولود بچے کے کان میں‌ آذان دینے کا کیا طریقہ ہے؟

موضوع: عبادات  |  آذان

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد عبد الباسط       مقام: لاہور، پاکستان

سوال نمبر 2472:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ جب بچہ پیدا ہو تو اس کے کان میں‌ آذان دینے کا طریقہ کیا ہے؟

جواب:

جب بچہ پیدا ہوتا ہے تو اس کے دائیں کان میں آذان اور بائیں کان میں اقامت کہنا مسنون عمل ہے۔ بچے کو اٹھا کر دائیں طرف مناسب آواز میں آذان اور بائیں طرف اقامت کہہ دیں اگر کوئی کاغذ یا کوئی پائپ نما چیز کے آگے لگا کر بھی آذان کہے تو اس میں بھی کوئی ممانعت نہیں ہے، لیکن بچے کے نرم و نازک کان کے پردوں کا بھی خیال رکھتے ہوئے آواز مناسب رکھی جائے۔ اس کے علاوہ کوئی قابل ذکر بات نہیں ہے۔

مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
کیا شرع کی رُو سے نومولود کے کانوں میں اذان دینا جائز ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-03-26


Your Comments