Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - حضرت سکینہ (رض) کو کربلا میں‌ اٹھانے والی حکایت درست ہے؟

حضرت سکینہ (رض) کو کربلا میں‌ اٹھانے والی حکایت درست ہے؟

موضوع: متفرق مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد ذوالفقار       مقام: انڈیا

سوال نمبر 2443:
ياتی علی الناس زمان يجتمعون فی المساجد ليس فيهم مؤمن. یہ حدیث پاک کون سی کتاب میں ہے؟ دوسرا سوال یہ ہے کہ مابعد کربلا میں جب قافلہ ایک میدان میں رُکا تو اس کے بعد قافلہ آگے چلا گیا تو حضرت سکینہ رضی اللہ تعالیٰ عنھا پیچھے رہ گئی تو حضرت زینب واپس گئیں تو دیکھا حضرت سکینہ کو ایک عورت نے گود میں اُٹھایا ہوا تھا۔ یہ حکایت کون سی کتاب میں ہے؟ یہ دونوں سوال کسی شخص نے آپ سے معلوم کرنے کی غرض سے رابطہ کیا ہے۔

جواب:

1۔ ہاں یہ حدیث مبارکہ ہے امام حاکم نے اس کو امام بخاری اور مسلم رضی اللہ عنہما کی شرائط کے مطابق صحیح الاسناد کہا ہے۔

عن عبد الله بن عمرو رضی الله عنهما قال ياتی علی الناس زمان يجتمعون فی المساجد ليس فيهم مؤمن.

"حضرت عبد اللہ ابن عمر رضی اللہ عنہما سے مروی ہے کہ لوگوں پر ایسا زمانہ بھی آئے گا کہ وہ مسجدوں میں جمع ہونگے لیکن ان میں سے کوئی بھی مؤمن نہیں ہو گا"۔

  1. حاکم، المستدرک، 4 : 489، دار الکتب العلمية، بيروت

  2. ابن ابی شيبة، المصنف، 6 : 163 - 7 : 505، رقم : 30355 - 37586 مکتبه الرشيد، الرياض

2۔ کربلا والا واقعہ آپ نے جس سے سنا ہے۔ اس سے حوالہ طلب کریں اگر کسی کا خطاب سنا ہے تو اس خطاب کا موضوع، سی ڈی نمبر اور خطیب کا نام بتائیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-03-26


Your Comments