Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا ایام مخصوصہ میں عورتیں عبادت کر سکتی ہیں؟

کیا ایام مخصوصہ میں عورتیں عبادت کر سکتی ہیں؟

موضوع: عبادات  |  طہارت   |  نماز  |  روزہ  |  غسل   |  حیض   |  نفاس   |  استحاضہ   |  نجاستیں

سوال پوچھنے والے کا نام: شبیرہ       مقام: لندن

سوال نمبر 1696:
السلام علیکم مجھے ایک سوال پوچھنا ہے جو ایک لڑکی نے گروپ میں بیٹھ کر سب کے سامنے کہا ہے کہ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے کبھی نماز قضا نہیں کی، حتی کہ ایام مخصوصہ میں‌ بھی۔ مجھے یہ بات بہت عجیب لگی ہے، کہ ان دنوں میں تو عورتوں کو گناہ ملتا ہے نماز پڑھنے سے، آپ پرائے مہربانی درست راہنمائی فرما دیں۔ شکریہ

جواب:

ایام مخصوصہ میں عورتیں عبادت نہیں کر سکتی، ان کو ان دنوں میں نماز، روزہ کی اجازت نہیں ہے۔

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے کبھی کوئی نماز قضاء نہیں کی کیونکہ آپ حضور علیہ الصلاۃ والسلام کے ساتھ رہتی تھی۔ اس میں کوئی شک وشبہ نہیں ہے۔ باقی ایام مخصوصہ میں ساری عورتوں کے لیے احکام ایک جیسے ہی ہیں۔ اور حضرت عائشہ رضی اللہ عنہ اپنے ایام مخصوصہ کے بارے میں جانتی ہیں کوئی اور نہیں۔ جو بھی یہ کہتا ہے کہ آپ رضی اللہ عنہا ایام مخصوصہ میں عبادت کرتی تھیں اس نے جھوٹ بولا ہم نے آج تک نہ تو ایسا قرآن وحدیث میں کہیں پڑھا اور نہ سنا، جو ایسا کہتا ہے وہ اس پر ثبوت پیش کرے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-04-24


Your Comments