Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا کاروبار کا نقصان حصہ دار کے سر پر ڈالنا جائز ہے؟

کیا کاروبار کا نقصان حصہ دار کے سر پر ڈالنا جائز ہے؟

موضوع: خریدو فروخت (بیع و شراء، تجارت)   |  شراکت   |  مضاربت   |  معاملات

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد سہیل       مقام: بنکاک

سوال نمبر 1644:
کیا کاروبار کا نقصان پارٹنر (حصہ دار) کے سر پر ڈالنا جائز ہے؟

جواب:

کاروبار میں نفع ونقصان میں شراکت کے مطابق جیسا معاہدہ کیا جائے گا ویسا ہی اس کا حکم ہو گا۔ اگر آپ کا معاہدہ پارٹنر کے ساتھ اس طرح طے ہوا تھا کہ وہ نقصان کا مطالبہ کر سکتے ہیں وگرنہ نہیں۔ جس طرح منافع میں شراکت کا معاہدہ ہوتا ہے کہ کتنے فیصد منافع ملے گا ویسے ہی نقصان میں بھی معاہدہ ہوتا ہے کہ پارٹنر نے نقصان کی صورت میں کتنے فیصد ادا کرنا ہے۔ اب آپ کے معاملے میں آپ کا پارٹنر آپ کے ساتھ کیے گئے معاہدے کے مطابق ہی پابند ہو گا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-04-14


Your Comments