Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - 12 ربیع الاول کو 12 وفات کہنا کیسا ہے؟

12 ربیع الاول کو 12 وفات کہنا کیسا ہے؟

موضوع: میلاد النبی صلی اللہ علیہ وسلم

سوال پوچھنے والے کا نام: حافظ محمد رمضان       مقام:

سوال نمبر 1620:
میرا سوال یہ ہے کہ کچھ عرصہ پہلے تک 12 ربیع الاول کو 12 وفات بھی کہتے تھے اور اب ہم جشن مناتے ہیں، اور عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کہتے ہیں۔ کیوں؟

جواب:

جی ہاں اس میں کوئی شک وشبہ کی بات نہیں ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ولادت با سعادت 12 ربیع الاول کو ہوئی اور آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا وصال مبارک بھی 12 ربیع الاول کو ہوا۔

رہا یہ سوال کہ ہم جشن کیوں مناتے ہیں خوشیاں کیوں مناتے ہیں؟ اور غم کیوں نہیں مناتے تواس کو جواب شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی کتاب عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں تفصیل سے لکھا ہوا ہے کہ ہم خوشیاں کیوں مناتے ہیں اور غم کیوں نہیں؟ اور صحابہ کرام رضی اللہ عنہم آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے وصال پر غمزدہ کیوں ہوئے تھے پریشان کیوں ہوئے تھے؟

آن لائن مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-04-10


Your Comments