کیا چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے؟

سوال نمبر:1589
کیا کوئی چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے؟ اگر وہ حافظ قرآن ہو، اور اسلامی علم جانتا ہو، کیا اس کے بارے میں‌ حدیث مبارکہ میں کوئی بیان ہے؟

  • سائل: وسیم عباسمقام: لاڑکانہ، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 02 اپریل 2012ء

زمرہ: امامت   |  شرائط امامت   |  داڑھی کی شرعی حیثیت

جواب:

جی ہاں چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے، اس کی امامت کروانے میں شرعی قباحت کوئی نہیں، داڑھی کا بڑا ہونا شرائط امامت میں سے نہیں ہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا :

صلو خلف کل بروفاجر

ہر نیک و بد کے پیچھے نماز پڑھ لو۔

دار قطنی، بحواله هدايه، 1 : 84

مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
داڑھی کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟