Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے؟

کیا چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے؟

موضوع: امامت   |  شرائط امامت   |  داڑھی کی شرعی حیثیت

سوال پوچھنے والے کا نام: وسیم عباس       مقام: لاڑکانہ، پاکستان

سوال نمبر 1589:
کیا کوئی چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے؟ اگر وہ حافظ قرآن ہو، اور اسلامی علم جانتا ہو، کیا اس کے بارے میں‌ حدیث مبارکہ میں کوئی بیان ہے؟

جواب:

جی ہاں چھوٹی داڑھی والا امامت کروا سکتا ہے، اس کی امامت کروانے میں شرعی قباحت کوئی نہیں، داڑھی کا بڑا ہونا شرائط امامت میں سے نہیں ہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا :

صلو خلف کل بروفاجر

ہر نیک و بد کے پیچھے نماز پڑھ لو۔

دار قطنی، بحواله هدايه، 1 : 84

مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
داڑھی کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-04-02


Your Comments