کیا نکاح سے قبل جسمانی تعلقات قائم کرنا جائز ہے؟

سوال نمبر:1459
میں نے ایک دفعہ کسی اسکالر سے سنا تھا کہ اگر لڑکی اور لڑکے کو کنفرم ہو کہ وہ مستقبل میں شادی کر لیں گے تو تب وہ ابھی سے ہی فزیکلی تعلقات شروع کر سکتے ہیں۔ میں یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا یہ صحیح ہے یا نہیں؟ تفصیل سے وضاحت فرما دیں شکریہ۔

  • سائل: نا معلوممقام: پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 15 فروری 2012ء

زمرہ: جدید فقہی مسائل

جواب:

نکاح سے پہلے اگر فزیکل تعلقات ہوں تو یہ زنا ہوتا ہے، اگرچہ بعد میں وہ دونوں شادی کر لیں۔ نکاح سے پہلے ایسے تعلقات قائم کرنا زنا ہے۔ نکاح کے بعد دونوں کے تعلقات حلال اور شریعت کے مطابق ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟