حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بیعت اللہ کی بیعت کیوں قرار پائی؟

سوال نمبر:144
حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بیعت اللہ کی بیعت کیوں قرار پائی؟

  • تاریخ اشاعت: 21 جنوری 2011ء

زمرہ: عقائد  |  ایمانیات  |  ایمانیات  |  ایمانیات  |  ایمانیات

جواب:

قرآن و سنت سے یہ بات ثابت ہے کہ روئے زمین پر انبیائے کرام علیہم السلام اللہ کے خلیفہ رہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم بھی اللہ کے خلیفہ ہیں۔ خلیفہ نائب ہوتا ہے اور خلیفہ یا نائب کی بات ماننا اسی طرح ہے جیسے اصل مالک و مختار کی بات ماننا، یہی وجہ ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اطاعت اور غلامی کو اللہ کی اطاعت اور غلامی تسلیم کیا گیا ہے۔

اللہ تعالیٰ ارشاد فرماتے ہیں :

مَنْ يُّطِعِ الرَّسُوْلَ فَقَدْ اَطَاعَ اﷲَO

’’جس نے رسول کی اطاعت کی پس اس نے اللہ کی اطاعت کی۔‘‘

 النساء، 4 : 80

تو جس طرح حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اطاعت اللہ کی اطاعت ہے پس اسی طرح حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے بیعت کرنا اللہ تعالیٰ سے بیعت کرنا ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • وطن سے محبت کی شرعی حیثیت کیا ہے؟