Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا نوافل اور سنت غیر موکدہ برابر ہیں؟

کیا نوافل اور سنت غیر موکدہ برابر ہیں؟

موضوع: نفلی نمازیں   |  سنت غیر موکدہ  |  عبادات  |  نماز

سوال پوچھنے والے کا نام: یاور اقبال       مقام: آسٹریلیا

سوال نمبر 1379:
کیا نوافل اور سنت غیر موکدہ برابر ہیں؟ یہ دونوں عوامل آقا (ص) نے کیے بھی اور چھوڑے بھی ہیں؟

جواب:

سنت غیر مؤکدہ

سنت غیر مؤکدہ سے مراد یہ ہے کہ جن کو حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ادا بھی کیا ہو اور ترک بھی فرمایا ہو۔ وہ اعمال و افعال جو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے کبھی ادا فرمائے اور کبھی ترک کیے ہوں تو انہیں سنت غیر مؤکدہ کہتے ہیں۔

نوافل

فرائض اور واجبات کے علاوہ عبادت کو نوافل کہا جاتا ہے۔ اس کا منعی ہے فرائض و واجبات سے زائد نماز۔ ایسے اعمال و افعال کا تعلق اس سے نہیں کہ انہیں حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ادا فرمایا یا نہیں،

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-03-08


Your Comments