زیر ناف بال کہاں تک کاٹنے کا حکم ہے؟

سوال نمبر:1111
زیر ناف بال کہاں تک کاٹنے کا حکم ہے؟

  • سائل: محمد ایوبمقام: لاہور، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 15 ستمبر 2011ء

زمرہ: جسمانی صفائی  |  طہارت

جواب:

فتاویٰ عالمگیریہ اور دیگر کتب فقہ میں لکھا ہے :

و يبتدی فی حلق العانة من تحت السرة.

(عالمگيری، 5 : 358)

ناف سے لے کر خصیتین (انڈوں) تک اور ارد گرد تک بال کاٹنا چاہیے۔

الغرض سبیلین کے آس پاس موجود تمام بالوں کا تلف کرنا ضروری ہے تاکہ صفائی برقرار رکھ سکے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟