Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا بیوٹی پارلر کھولنا جائز ہے؟

کیا بیوٹی پارلر کھولنا جائز ہے؟

موضوع: جدید فقہی مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: صائمہ نذیر       مقام: گجرانوالا، پاکستان

سوال نمبر 1039:
میں بیوٹی پارلر کھولنا چاہتی ہوں اور مجھے برائیڈل میک اپ کرنے کا بہت شوق ہے اس سلسلے میں میری راہنمائی فرمائیں؟

جواب:

خواتین خواتین کا میک اپ کرسکتی ہیں۔ مرد خواتین کا اور خواتین مردوں کا میک اپ نہیں کر سکتی یہ جائز نہیں ہے۔

بغیر ضرورت عورت عورت کی ان جگہوں کو بھی نہیں دیکھ سکتی جن کا چھپانا ضروری ہے یعنی ناف سے گھٹنوں تک۔ بوقت ضرورت ناف سے گھٹنوں تک کے علاوہ دیکھ اور چھو سکتی ہے، بشرط یہ کہ شہوت نہ ہو۔

(ہدایہ، بہار شریعت)

مسلمان عورت پر لازم ہے کہ وہ فحاشہ اور کافرہ عورت سے اپنا بدن چھپائے۔

(عالمگیری بحوالہ بہار شریعت)

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: صاحبزادہ بدر عالم جان

تاریخ اشاعت: 2011-06-17


Your Comments