Fatwa Online

اذان اور اقامت کے درمیان کتنا دورانیہ ہونا چاہئے؟

سوال نمبر:386

اذان اور اقامت کے درمیان کتنا دورانیہ ہونا چاہئے؟

سوال پوچھنے والے کا نام:

  • تاریخ اشاعت: 26 جنوری 2011ء

موضوع:عبادات  |  عبادات

جواب:

اذان کہتے ہی اقامت کہہ دینا مکروہ ہے۔ مؤذن کے لیے سنت یہ ہے کہ اذان اور اقامت کے درمیان افضل وقت کا لحاظ رکھتے ہوئے اتنی دیر ٹھہر جائے کہ جو لوگ پابندی سے مسجد میں نماز پڑھتے ہیں وہ آجائیں مگر اتنا انتظار بھی نہ کیا جائے کہ وقت کراہت آجائے۔ مغرب کی نماز میں اقامت کے لیے دیر نہیں کرنا چاہیے بلکہ اذان اور اقامت کا درمیانی وقفہ بہت مختصر ہونا چاہیے یعنی اتنا ہو کہ اس دوران تین آیات پڑھی جا سکیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

Print Date : 12 November, 2019 02:52:29 PM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/386/