Fatwa Online

غسل کے فرض ہونے کی کیا صورت ہے؟

سوال نمبر:345

غسل کے فرض ہونے کی کیا صورت ہے؟

سوال پوچھنے والے کا نام:

  • تاریخ اشاعت: 26 جنوری 2011ء

موضوع:غسل

جواب:

غسل کے فرض ہونے کی درج ذیل صورتیں ہیں:

  1. منی شہوت کی وجہ سے نکل جائے تو غسل فرض ہے اور اگر محنت و مشقت کی وجہ سے نکلے تو غسل لازم نہیں البتہ وضو ٹوٹ جاتا ہے۔
  2. اگر پتلی منی پیشاب کے ساتھ بغیر شہوت کے نکلی تو غسل فرض نہیں۔
  3. سو کر اٹھنے کے بعد کپڑوں پر کچھ نشانات پائے گئے تو اس پر غسل کی چند صورتیں ہیں :
    1. اگر اس کے ودی یا مذی دونوں میں سے ایک کے ہونے کا یقین یا اِحتمال ہو تو غسل واجب نہیں۔
    2. اگر یقین ہے کہ منی یا مذی نہیں کچھ اور ہے تو غسل واجب نہیں۔
    3. اگر منی ہونے کا یقین ہو تو غسل لازم ہو گا خواب میں احتلام ہونا یاد ہو یا نہ ہو۔
  4. مجامعت سے مرد اور عورت پر غسل فرض ہو جاتا ہے خواہ انزال ہو یا نہ ہو۔
  5. عورت حیض سے فارغ ہو تو اس پر غسل فرض ہے۔
  6. عورت نفاس سے فارغ ہو تو اس پر غسل فرض ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

Print Date : 08 December, 2022 06:31:10 PM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/345/