Fatwa Online

دو رکعات سنت پڑھنی تھی نیت چار کی ہو گئی تو ان کو کیسے پڑھا جائے گا؟

سوال نمبر:2040

اگر دو رکعات سنت پڑھنی ہے اور نیت چار کی ہو جائے تو سلام پھیر کر دوبارہ نیت کر کے پڑھنی چاہیے یا نماز کے اندر ہی دو کی نیت کر کے پڑھ سکتے ہیں؟

سوال پوچھنے والے کا نام: وقاص حسین

  • مقام: سمبڑیال
  • تاریخ اشاعت: 13 اگست 2012ء

موضوع:نماز کی سنتیں   |  نماز  |  عبادات

جواب:

دو رکعات سنت پڑھنی تھی نیت چار کی ہو گئی تو صرف دو رکعت پڑھنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔ نماز توڑ کر نئی نیت کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اگر چار رکعات ہی ادا کر دی جائیں تو دو سنت ہو جائیں گی اور باقی دو نفل۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی:حافظ محمد اشتیاق الازہری

Print Date : 30 September, 2022 09:44:27 PM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/2040/