Fatwa Online

کیا ایصال ثواب کی ہوئی چیز کو گھر لانے سے نحوست آتی ہے؟

سوال نمبر:1370

فوت شدہ کو دوسرے دن ایصال ثواب کرنا آپ کی نظر میں کیسا ہے؟ اس میں عام طور پر میٹھی چیز یا فروٹ وغیرہ تقسیم کیا جاتا ہے، کیا ایصال ثواب کی ہوئی چیز گھر لانے سے گھر میں نحوست آتی ہے؟

سوال پوچھنے والے کا نام: اسلام

  • مقام: انڈیا
  • تاریخ اشاعت: 12 جنوری 2012ء

موضوع:ایصال ثواب

جواب:

ایصال ثواب کی ہوئی چیز کو گھر لانے سے نحوست نہیں آتی ہے۔ امیر آدمی کو صدقہ سے اجتناب کرنا چاہیے، اور غرباء میں اس کو تقسیم کرنا چاہیے۔ صدقہ اچھی شے نہیں ہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ صدقہ ہاتھ کی میل ہے۔

لہذا صدقہ کھانے والے امیر لوگوں کے دل مردہ ہو جاتے ہیں، بہتر یہی ہے کہ صدقہ خیرات کی اشیاء کو غرباء میں ہی تقسیم کر دیا جائے، البتہ اگر کوئی چیز صدقہ و خیرات کی گئی ہو اور گھر میں لائی جائے تو اس سے نحوست نہیں آتی۔

مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
کیا قُل، چالیسواں اور برسی کے ختم جائز ہیں یا نہیں؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی:حافظ محمد اشتیاق الازہری

Print Date : 08 December, 2019 02:34:03 AM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/1370/