Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - طلاق کنایہ

طلاق کنایہ (17)

  1. کیا بیوی کو ’تم آزاد ہو‘ کہنے سے طلاق واقع ہو جاتی ہے؟
  2. کیا طلاقِ صریح کے بعد طلاقِ کنایہ واقع ہوتی ہے؟
  3. طلاقِ صریح و کنایہ سے کیا مراد ہے؟
  4. کیا طلاق کی مؤثریت کے لیے اس کا تحریری ہونا ضروری ہے؟
  5. طلاق صریح سے پہلے کنایہ الفاظ سے طلاق دینے کا کیا حکم ہے؟
  6. طلاق کے الفاظ کنایہ سے کیا مراد ہے؟
  7. ’تم مجھ پر حرام ہو‘ کہنے سے طلاق واقع ہوتی ہے؟
  8. کیا طلاقِ کنایہ کے بعد مشروط طلاق واقع ہوگی؟
  9. کسی کی تعریف کرنے پر شوہر نے بیوی سے کہا ’اُسی کے پاس چلی جا‘ کیا طلاق ہوگئی؟
  10. کیا اردو زبان کا لفظ ’فارغ‘ طلاق کے لیے صریح لفظ ہے؟
  11. کیا کنایہ الفاظ سے دی گئی طلاق کے بعد طلاقِ‌ صریح واقع ہوتی ہے؟
  12. کیا طلاق بائن کے بعد دی گئی طلاق واقع ہوگی؟
  13. بیوی کے طلاق مانگنے پر شوہر نے کہا ’ٹھیک ہے، الگ ہو جاؤ‘ تو کیا طلاق ہوگئی؟
  14. طلاق کے لیے معروف الفاظِ کنایہ میں شوہر کی نیت معتبر ہے؟
  15. شوہر کے الفاظ‌ ’جا میں نے تجھے چھوڑ دیا‘ سے کونسی طلاق واقع ہوگی؟
  16. شوہر کے الفاظ ’تم میری طرف سے فارغ ہو‘ سے کونسی طلاق واقع ہوگی؟
  17. کیا طلاقِ رجعی کے بعد کنایہ الفاظ سے دی ہوئی طلاق واقع ہوجاتی ہے؟
کوئی ذیلی زمرہ موجود نہیں