Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - انشورنس کی رقم پر زکوٰۃ کی ادائیگی کا کیا حکم ہے؟

انشورنس کی رقم پر زکوٰۃ کی ادائیگی کا کیا حکم ہے؟

موضوع: زکوۃ  |  بیمہ و انشورنس

سوال پوچھنے والے کا نام: ماریہ وحید       مقام: لاہور

سوال نمبر 4131:
میرا سوال تکافل پر زکوٰۃ سے متعلق ہے۔ میں نے پاک-قطر فیملی تکافل سے پلان لیا ہے، جس کا سالانہ پریمیم ادا کرتی ہوں۔ سوال یہ ہے کہ زکوٰۃ مَیں ادا کروں گی یا تکافل کمپنی؟ اگر میں ادا کروں گی تو کس طرح اور کتنی ادا کروں گی؟

جواب:

آپ نے جس ادارے سے تکافل کا معاملہ کیا ہے ان سے معلوم کریں کہ وہ سالانہ بنیادوں پر زکوٰۃ کی ادائیگی کرتے ہیں یا نہیں؟ اگر مذکورہ ادارہ جمع شدہ رقوم پر زکوٰۃ ادا کرتا ہے تو آپ کو ادارے میں جمع شدہ رقم پر زکوٰۃ ادا کرنے کی ضرورت نہیں۔ اگر ان کا زکوٰۃ کی ادائیگی کا کوئی طریقہ کار نہیں تو آپ جمع شدہ رقم پر خود زکوٰۃ ادا کریں گی۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2017-02-17


Your Comments