Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - خلع کی صورت میں‌ بیوی سے زیورات واپس مانگنا کیسا ہے؟

خلع کی صورت میں‌ بیوی سے زیورات واپس مانگنا کیسا ہے؟

موضوع: خلع کے احکام

سوال پوچھنے والے کا نام: اصغر علی       مقام: لاہور

سوال نمبر 3940:
السلام علیکم! میری شادی کو ایک سال دو مہینے گزر چکے ہیں اور میرا ایک بچہ بھی ہے۔ میری بیوی میکے جا بیٹھی ہے اور مجھ سے خلع طلب کر رہی ہے۔ میں اس سے منانے کی بہت کوشش کر رہا ہوں، مگر وہ آنے کو تیار نہیں۔ اب میں ان کی طلب پر ان کو خلع دینا چاہتا ہوں، مگر چونکہ میں غریب ہوں اس لیے اپنے دیئے گئے تمام چیزیں مانگ رہا ہوں جیسے سونے کے زیور اور 260000 روپے جو میں نے ان کو دیے اور میرا بچہ جو ماں کا دودھ نہیں پیتا۔ کیا یہ جائز مانگ ہے؟

جواب:

اگر بیوی بلاوجہ خلع مانگ رہی ہے تو آپ اس سے حق مہر اور زیورات وغیرہ کی واپسی کا مطالبہ کر سکتے ہیں، اگرچہ واپس نہ لینا بہتر ہے۔ لیکن بچہ ابھی والدہ کے پاس ہی رہے گا، تاہم اس کا نان و نفقہ آپ کے ذمہ ہوگا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2016-06-16


Your Comments