Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - بیوی سے دوری پر کسی دوسری عورت سے مجامعت کیوں حرام ہے؟

بیوی سے دوری پر کسی دوسری عورت سے مجامعت کیوں حرام ہے؟

موضوع: متفرق مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد صدیق       مقام: انڈیا

سوال نمبر 2631:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ تین دن تک بھوکا رہنے کے بعد آدمی اپنی جان بچانے کی خاطر مردہ کتے کا گوشت کھا سکتا ہے تو بیوی سے دوری پر کسی اور عورت سے ناجائز مجامعت کس لیے حرام قرار پاتی ہے جب کہ آدمی کے جنسی ناآسودگی کا شکار ہو کر نفسیاتی پیچیدگیوں کے سبب پاگل بن جانے کے بھی امکانات روشن ہوتے ہیں اور اُس کا پاگل پن لمحہ لمحہ مرتے رہنے ہی کی تو نمائندگی کرتا ہے۔

جواب:

کھانا نہ کھانے سے انسان کی جان جا سکتی ہے۔ سوائے کچھ کھانے کے اس کا کوئی حل نہیں ہوتا، کیونکہ انسان کچھ کھائے بغیر زندہ نہیں رہ سکتا ہے۔ لیکن شہوت کو مباشرت کیے بغیر ختم کیا جا سکتا ہے۔ مثلا روزے رکھنے سے شہوت میں کمی پیدا کی جا سکتی ہے۔ لہذا آپ نے جس کو دلیل بنایا ہے یہ کوئی وزن نہیں رکھتی۔ اگر ایسا کرنا مسئلے کا حل ہوتا تو اس کی شریعت میں ہی اجازت دے دی جاتی۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-07-04


Your Comments