Fatwa Online

مسافر اگر اپنے رشتہ دار (بھائی، چچا، ماموں) کے گھر جائے تو قصر نماز پڑھے گا یا پوری؟

سوال نمبر:503

مسافر اگر اپنے رشتہ دار (بھائی، چچا، ماموں) کے گھر جائے تو قصر نماز پڑھے گا یا پوری؟

سوال پوچھنے والے کا نام:

  • تاریخ اشاعت: 27 جنوری 2011ء

موضوع:مسافر کی نماز   |  نماز  |  عبادات

جواب:

اگر مسافر کی آبائی جگہ پر رشتہ دار مقیم ہیں تو پوری نماز پڑھے ورنہ قصر نماز ادا کرے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

Print Date : 12 August, 2020 11:10:38 AM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/503/